زعفران

شناخت: کیسر )زعفران( کے اندرونی ریشے یا تار کیسر کہلاتے ہیں۔ زعفران کا پودا چھوٹا سا ہوتا ہے۔ اس کا تنا ایک سے ڈیڑھ فٹ لمبا ہوتا ہےاور پتے چنبیلی کے پتوں کی طرح ہوتے ہیں۔ اس کی جڑ پیاز کی طرح گول اور گٹھی دار ہوتی ہے۔ پھول شکل و رنگ کے لحاظ سے سورنجاں کے پھول کی  طرح ہوتے ہیں اور ان کے درمیان زعفران کے تین یا چار تار پائے جاتے ہیں۔

زعفران کا ہر ایک تار یا ریشہ ایک انچ کے قریب لمبا ہوتا ہے اور اس کے سر پر تین زیرے ہوتے ہیں جن کی رنگت نارنجی ہوتی ہے۔ یہ ریشہ چھونے سے ملائم اور چکنا معلوم ہوتا ہے۔ اس کی بو تیز، خوشگوار، ذائقہ کڑواو خوشبو دار ہوتا ہے۔ اگر ایک تار لے کر اس کو انگلی سے مسلا جائے تو نہایت گاڑھا پیلا رنگ پیدا ہوتا ہےاور اگر گرم پانی میں ڈال دیا جائے تو پانی کی رنگت بہت جلد پیلی ہو جاتی ہے۔

Description

شناخت: کیسر )زعفران( کے اندرونی ریشے یا تار کیسر کہلاتے ہیں۔ زعفران کا پودا چھوٹا سا ہوتا ہے۔ اس کا تنا ایک سے ڈیڑھ فٹ لمبا ہوتا ہےاور پتے چنبیلی کے پتوں کی طرح ہوتے ہیں۔ اس کی جڑ پیاز کی طرح گول اور گٹھی دار ہوتی ہے۔ پھول شکل و رنگ کے لحاظ سے سورنجاں کے پھول کی  طرح ہوتے ہیں اور ان کے درمیان زعفران کے تین یا چار تار پائے جاتے ہیں۔

زعفران کا ہر ایک تار یا ریشہ ایک انچ کے قریب لمبا ہوتا ہے اور اس کے سر پر تین زیرے ہوتے ہیں جن کی رنگت نارنجی ہوتی ہے۔ یہ ریشہ چھونے سے ملائم اور چکنا معلوم ہوتا ہے۔ اس کی بو تیز، خوشگوار، ذائقہ کڑواو خوشبو دار ہوتا ہے۔ اگر ایک تار لے کر اس کو انگلی سے مسلا جائے تو نہایت گاڑھا پیلا رنگ پیدا ہوتا ہےاور اگر گرم پانی میں ڈال دیا جائے تو پانی کی رنگت بہت جلد پیلی ہو جاتی ہے۔

Reviews

There are no reviews yet.

Be the first to review “زعفران”

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

three × one =