سنگھاڑے

خصوصیات:
ضروری معدنیات سے بھرپور
اصل میں جمع ہوئے۔
وٹامن اے، سی اور آئرن سے بھرپور
اینٹی آکسیڈینٹ
غیر سوزشی

استعمال:
رگوں کو طاقت عطا فرما
زخموں، کٹوں اور زخموں کے لیے مفید ہے۔
سوجن کو روکیں۔
السر کا علاج
گٹھیا اور جلد کی دیگر بیماریوں کا علاج کریں۔
بلڈ شوگر لیول کو برقرار رکھتا ہے۔
دل کے امراض کو کنٹرول کرتا ہے۔

Description

Hippocastanaceaare زمین کے نیچے بانی ہوتے ہیں اور جب پتے کا رنگ پیلا ہو جاتا ہے تو اس کی کٹائی کی جاتی ہے۔ آبی شاہ بلوط (سنگھرے کے فوائد) عام طور پر ہمالیہ، بلقان اور مغربی ایشیا کے علاقوں میں پایا جاتا ہے۔ یہ جڑی بوٹی کسیلی، نشہ آور اور تیز ہے، جو رگوں اور دیگر بہت سی بیماریوں کے علاج میں مددگار ہے۔ سٹیرائڈز، ٹریٹرپین، گلائکوسائیڈز، اور فلیوونائڈز کی وافر مقدار پر مشتمل، ہندوستانی شاہ بلوط بہت سے علاج کے فوائد حاصل کرتا ہے۔ کاربوہائیڈریٹس، امائیلوپیکٹین، فائٹوسٹرول اور امینو ایسڈز انسانی جسم کی فعالیت کو برقرار رکھنے اور رگوں کو طاقت دینے کے لیے بہترین ہیں۔

انڈین آبی شاہ بلوط (سنگھرے کے فوائد) میں غذائی ریشہ اور کاربوہائیڈریٹس کی بھی بہترین مقدار ہوتی ہے، جو ہاضمے کو بہتر بناتے ہیں، جب کہ کھانے سے جسم میں تیزی اور خون میں شوگر کی سطح بڑھ جاتی ہے۔ اس جڑی بوٹی میں موجود اینٹی آکسیڈنٹس مختلف وٹامنز اور منرلز کے ساتھ کینسر کو دور رکھ کر جسم کو طاقت دیتے ہیں۔ انڈین واٹر چیسٹنٹ کا مناسب استعمال ذیابیطس کا علاج کر سکتا ہے، جلد کو UV شعاعوں سے تحفظ فراہم کرتا ہے اور بلڈ پریشر کی سطح کو برقرار رکھتا ہے۔

مزید یہ کہ ضروری معدنیات کی بھرپور مقدار بشمول میگنیشیم، زنک، کاپر، اور فاسفورس بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے اور دل کی دھڑکن کو برقرار رکھتے ہوئے دل کے بہت سے مسائل کو حل کرنے کے لیے بہترین ہیں۔ سوزش اور جراثیم کش نقطہ نظر اس جڑی بوٹی کو زخموں اور چھوٹی چوٹوں کو ٹھیک کرنے میں مدد کرتا ہے۔ٹانک اور ڈیکنجسٹنٹ ہونے کی وجہ سے، ہندوستانی شاہ بلوط گٹھیا، سینے کے انفیکشن اور بواسیر کا بہترین حل ہے۔

Reviews

There are no reviews yet.

Be the first to review “سنگھاڑے”

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

2 + seventeen =